shahbaz sharif ch nisar

روٹھوں کو منانے کا موسم : شہباز شریف کی چوہدری نثار سے ملاقات ، معاملات کیسے طے پاگئے ؟ اندر کی خبر آ گئی

لاہور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف سے چوہدری نثار نے ماڈل ٹاﺅن لاہور میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی ہے، جس کے دوران شہباز شریف نے چوہدری نثارکے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق سابق وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار کی ماڈل ٹاﺅن میں شہبازشریف سے ملاقات ہوئی جس میں انہوں نے

وزیر اعلیٰ پنجاب کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا۔دونوں رہنماو¿ں کے درمیان ملکی سیاست اورپارٹی امورپربھی بات چیت ہوئی۔ شہباز شریف اور چوہدری نثار کی ملاقات تقریباً 45 منٹ جاری رہی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف نے چوہدری نثارکے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ انہیں پارٹی کے ساتھ چلتے رہنا چاہیے ۔دوسری طرف مسلم لیگ ق پنجاب کے جنرل سیکرٹری اورچوہدری برادران کے قریبی ساتھی چوہدری ظہیر الدین نے بھی پارٹی کو چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا ۔ذرائع کے مطابق چوہدری ظہیر الدین کے تحریک انصاف کی قیادت سے تمام معاملات طے پاگئے ہیں وہ جلد تحریک انصاف میں باقاعدہ شمولیت کا اعلان کریں گے ،ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ فیصل آباد سے تحریک انصاف کی جانب سے قومی اسمبلی کے امیدوار ہوں گے انکا مقابلہ مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری سے ہوگا۔چوہدری ظہیر الدین کچھ عرصے سے پارٹی کی سرگرمیوں سے دور ہیں اور وہ اہم اجلاسوں میں بھی شرکت نہیں کر رہے تھے ،چوہدری برادران کو بھی انکی تحریک انصاف سے درپردہ ملاقاتوں کا علم ہے یہی وجہ ہے کہ انہیں پارٹی کی اہم مشورہ سازی سے الگ کردیا گیا تھا۔چوہدری برادران نے انہیں روکنے کی کوششیں بھی کیں مگر وہ بارآور ثابت نہ ہوسکیں۔

دوسری جانب سرگودھا سے سٹاف رپورٹر کے مطابق ممبر صوبائی اسمبلی سابق صوبائی وزیرچوہدری عامر سلطان چیمہ،چوہدری منیب سلطان چیمہ نے تحریک انصاف میں شمولیت کا فیصلہ کرلیا ۔آئندہ48گھنٹوں میں بنی گالا میں عمران خان سے ملاقات کرکے شمولیت کا باضابطہ اعلان کریں گے ۔چوہدری عامر سلطان چیمہ نے کہا ہے کہ اس وقت عمران خان واحد لیڈر اور امید کی کرن ہیں جو ملک کو موجودہ بحرانوں سے نکال سکتے ہیں۔ کرپشن کا خاتمہ کئے بغیر ملک ترقی نہیں کرسکتا۔ بلا امتیا ز احتساب وقت کی اہم ضرورت ہے عمران خان نے کرپٹ عناصر کو بے نقاب کرکے ملک وملت پر بہت بڑا احسان کیا ہے ان کے اس احسان کو آنے والی نسلیں بھی یاد رکھیں گی، انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے حکمرانوں نے عوام سے کیا گیا کوئی بھی وعدہ پورا نہیں کیا،2018 میں لوڈشیڈنگ کے خاتمہ کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں، گرمیاں شروع ہوتے ہی کئی کئی گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ نے حکومتی دعوئوں کی قلعی کھول دی ہے ۔ الیکشن قریب آتے ہی اب لوڈ شیڈنگ آئندہ سالوں میں ختم کرنے کے دعوے کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف اس وقت اپنی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں اور اپنے ذاتی مفادات کیلئے ملک کو مزید بحرانوں کی طرف دھکیل رہے ہیں۔