Ch nisar

راولپنڈی سے بڑی خبر: ایسا کیا ہو گیا کہ چودھری نثار اچانک ناراض ہو گئے اور اپنی پریس کانفرنس ادھوری چھوڑ کر چلے گئے

راولپنڈی :سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار صحافیوں کی جانب سے سیاسی سوالات کرنے پر ناراض ہوکر پریس کانفرنس چھوڑ کر چلے گئے۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیر داخلہ نے راولپنڈی میں اسپتال کا افتتاح کیا جس کے بعد وہ میڈیا سے گفتگو کرنے کے لیے آئے۔صحافیوں کی جانب سے چوہدری نثار سے سیاسی سوالات کیے گئے

جس پر انہوں نے ابتداء میں ہی جواب دینے سے گریز کیا اور صحافیوں سے بار بار اسپتال سے متعلق بات کرنے پر اصرار کیا۔چوہدری نثار کے بارہا منع کیے جانے کے باوجود ان پر سیاسی سوالات کی بوچھاڑ ہو گئی جس پر سابق وزیرداخلہ نہ صرف خفا ہوئے بلکہ برہم ہوکر پریس کانفرنس ہی چھوڑ کر چلے گئے۔ سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار نے پریس کانفرنس میں کہاہے کہ میں نے اپنے حلقے میں بہت ترقیاتی کام کروائے ہیں اور ہسپتال حلقے کی عوام کیلئے بڑا تحفہ ہے ۔تفصیلات کے مطابق واہ کینٹ میں گفتگو کرتے ہوئے چوہدری نثار کا کہناتھا کہ انتخابات کے بعد جو بھی حکومت آئی تو ہسپتال کے پراجیکٹ کو آگے لے کر جائیں گے ،تحصیل پنڈی میں کوئی ہسپتال نہیں تھا ، روات کے مقام پر ہسپتال بنوایا ۔انہوں نے کہا کہ صحت اور تعلیم کے میدان میں بہت توجہ کی ضرورت ہے تاہم سب سے زیادہ توجہ گورننس پر دینے کی ضرورت ہے ۔سابق وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ اپنے دور اقتدار میں لڑکے اور لڑکیوں کے کالجز اور سکولوں کی منظوری دلوائی ہے ،موجودہ حکومت کے صرف چھ ہفتے رہ گئے ہیں ، اپنے دور اقتدار میں جو کر سکتا تھا وہ میں نے کیاہے ۔سیاسی باتیں توکرتا رہتا ہوں،آج ترقیاتی کاموں پربات ہوتوصحیح ہے ۔ان کا کہناتھا کہ آج سے دو سال پہلے اس ہسپتال کو پایا تکمیل تک پہنچنا ناممکن لگتا تھا لیکن کنٹریکٹرز اور انتظامیہ کی کوششوں سے یہ ممکن ہو پایا ہے ۔