ایتھے رکھ۔۔۔۔۔ شریف خاندان نے لندن فلیٹس کس کی موجودگی میں خریدے؟ سینئر صحافی آفتاب اقبال نے ثبوت ڈھونڈ نکالے، تہلکہ خیز انکشافات

لاہور:شریف خاندان کے لندن فلیٹس کس سال اور کس سیاسی رہنما کی موجودگی میں خریدے گئے، اس حوالے سے تفصیلات سامنے آگئی ہیں۔ تفصیلات کے مطابقمعروف صحافی اور اینکر آفتاب اقبال کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے تہلکہ خیز انکشافات کیے گئے ہیں۔

آفتاب اقبال کا دعوی ٰہے کہ شریف خاندان کے لندن فلیٹس جس آف شور کمپنی نیسکول کے اثاثہ ہیں، وہ کمپنی 1993 میں بنائی گئی۔ نیسکول نامی کمپنی جس روز قائم کی گئی اسی روز اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف سوئزرلینڈ میں ہی موجود تھے۔ جبکہ اسی برس نیسکول کے قیام کے عمل میں آنے کے بعد یکم جون کو لندن فلیٹس بھی خریدے گئے تھے۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق احتساب عدالت میں شریف فیملی کیخلاف دائرریفرنسز میں اہم پیشرفت ہوئی ہے،نیب نے شریف فیملی کی نیلسناور نیسکول کمپنیوں کاتمام ریکارڈ حاصل کرلیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق برطانیہ نے شریف فیملی کی جائیداد اور کمپنیوں کے دستاویزی ثبوت نیب کوفرام کردیے ہیں۔نیب نے برطانوی حکومت سے شریف فیملی کی نیلسن اور نیسکول کاتمام ریکارڈ حاصل کرلیا۔ریکارڈ میں لندن فلیٹس اور دیگرجائیداد کی تفصیلات بھی موجود ہیں۔ریکارڈ حاصل کرنے کیلئے ڈی جی نیب بھی لندن میں موجود رہے۔برطانوی حکومت سے ملنے والا تمام ریکارڈ نیب احتساب عدالت میں پیش کرے گی۔دوسری جانب شریف فیملی کی طرف سے بھی برطانوی ہوم ڈیپارٹمنٹ سے رابطہ کیا گیا تھا۔سپریم کورٹ نے ریگولائزیشن 2ہفتے میں مکمل کرنے کا حکم دیا ہوا ہے۔