shahbaz sharif

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو پہلے کیوں چھوٹ دی جارہی تھی اور اب ان کے خلاف کونسی بڑی کارروائی ہونے والی ہے؟ معروف صحافی کا انکشاف

لاہور:سینئر تجزیہ کارمحمد مالک نے کہا ہے کہ نوازشریف کے بعد شہباز شریف کیخلاف گھیرا تنگ ہونے لگا، نوازشریف اور شہباز شریف دونوں کا صفایا ہوجاتا ہے توکیا مسلم لیگ ن جڑی رہے گی؟ انہوں نے نجی ٹی وی کے اپنے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہنوازشریف کوسپریم کورٹ نے تاحیات نااہل قرار دے دیا ہے۔

سپریم کورٹ کے فیصلے بعد مریم نواز خوب گرجی اور برسیں۔مریم نوازکے اس گرجنے سے آنے والے حالات کا عندیہ ملتا ہے۔ سپریم کورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی روزانہ کی بنیاد پرتحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ روزانہ کی بنیاد پرسماعت کیلئے سپریم کورٹ نے انسداد دہشتگردی عدالت کے جج کی چھٹی بھی منسوخ کردی ۔اس سے ظاہرہوتا ہے کہ نوازشریف کے بعد اب شہباز شریف کیخلاف بھی گھیرا تنگ کیا جارہا ہے۔پہلے لگتا یہ تھا کہ شاید اسٹیبلشمنٹ شہبازشریف کے ساتھ کام کرسکتی ہے اس لیے ان کومحفوظ رکھا جارہا ہے۔حدیبیہ کا کیس سپریم کورٹ کے بنچ نے اوپن نہیں کیا پھر اسی طرح طاہرالقادری بھی باہر چلے گئے۔لیکن اب کچھ اس کے برعکس ہونے جارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ کیانوازشریف اور شہباز شریف دونوں کا صفایا ہوجاتا ہے توکیا مسلم لیگ ن جڑی رہے گی؟ واضح رہے کہ اس سےقبل چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار سپریم کورٹ رجسٹری لاہور میں مختلف کیسز کی سماعت کے لیے پہنچے تو عدالت کے باہر سانحہ ماڈل ٹاؤن کے شہدا کے لواحقین نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور چیف جسٹس پاکستان سے انصاف کی اپیل کی۔ متاثرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھےجن پر چیف جسٹس سے ازخود نوٹس لینے کی اپیل کی گئی تھی۔ مظاہرین نے کہا کہ ماڈل ٹاون میں 14 بے گناہ افراد کو قتل کیا گیا، چیف جسٹسنے مظاہرین کو اندر بلالیا اور واقعے میں جاں بحق خاتون کی بیٹی بسمہ نے چیف جسٹس سے ملاقات کی۔ بسمہ نے بتایا کہ چار سال گزر گئے ابھی تکانصاف نہیں ملا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ انصاف ملے گا،میرے ہوتے ہوئے ڈرنے کی ضرورت نہیں ۔ چیف جسٹس نے سانحہ ماڈل ٹاؤن میں جاں بحق افراد کے لواحقین اور زخمیوں کو انصاف کی فراہمی میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے پنجاب حکومت سے وجوہات اور تفصیلات طلب کرلیں۔